62

یہ کس قسم کا سسٹم ہے کہ آپ آزاد الیکشن بھی نہیں کروا سکتے‘ بلاول بھٹو

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم عمران خان پر طنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ صرف چور ڈاکو لٹیرے کے نعرے لگاؤ گے تو مسائل کیسے حل کرو گے،
اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب میں بلاول کا کہنا تھا کہ ہمیں انسانی حقوق پر کوئی سمجھوتا نہیں کرنا، انسانی حقوق طاقت ہیں کمزوری نہیں، بنیادی انسانی حقوق طلبہ کے تحفظ میں اہم ہیں اور مجھے سندھ حکومت پر فخر ہے کہ اس نے طلبہ یونینز کی بحالی کی اجازت دی، آج کے پاکستان میں ہمارے پاس اظہار رائے کی آزادی ہے لیکن ان کے بعد کی گارنٹی نہیں۔
انہوں نے کہا کہ اگر ہم مثبت تنقید بھی نہیں سنیں گے تو آگے کیسے بڑھیں گے؟ اپوزیشن کو سن کر بہتر حل نکالے جاسکتے ہیں لیکن جب میں پارلیمان میں کھڑا ہوتا ہوں تو وہاں کوئی سننے کو تیار نہیں ہوتا، اگر آپ صرف چور ڈاکو لٹیرے کہیں گے تو آگے کیسے بڑھیں گے،
پی پی چیئرمین کا کہنا ہے کہ پاکستان میں ہم آج بھی شفاف انتخابات نہیں کروا سکتے، یہ کس قسم کا سسٹم ہے کہ آپ آزاد الیکشن نہیں کروا سکتے، آپ سیاست کو آزاد چھوڑ دیں، آپ چیزوں کو مشکل بنا رہے ہیں، عوام کے لیے آسانیاں پیدا کریں لیکن جس طرح عوام کے حق پر ڈاکہ ڈالا جاتا ہے ہم سب کو مل کر اس کا حل نکالنا ہے۔
قانون سازی کے حوالے سے بلاول کا کہنا تھا کہ جب تک ایوانوں میں عوام کے نمائندے نہیں آئیں گے تو کٹھ پتلیاں اپنی قانون سازی کرتی رہیں گی، جب سلیکٹڈ قانون سازی ہوتی ہے تو وہ سلیکٹرز کے مفاد میں ہوتی ہے اور جب عوامی نمائندے منتخب ہوتے ہیں تو عوام کے مفاد میں قانون سازی ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں