انتخابات سے بھاگنا ن لیگ کی عادت بن چکی ہے، بلاول بھٹو

ن لیگ چاہے یا نہیں مگر آٹھ فروری کو ہر صورت انتخابات ہوں گے،چیئرمین بلاول-فوٹو: فائل

ہم الیکشن میں اُتر چکے مگر کوئی دوسرا نظر نہیں آ رہا: بلاول بھٹو
لاہور: پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ انتخابات سے بھاگنا مسلم لیگ ن کی عادت بن چکی ہے، ن لیگ چاہے یا نہیں مگر آٹھ فروری کو ہر صورت انتخابات ہوں گے۔لاہور میں حلقہ این اے 127 میں پیپلز پارٹی کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ ہم نے سنا تھا لاہور ن لیگ کا شہر ہے مگر یہاں تو مسلم لیگ ن نظر ہی نہیں آرہی، عوام اب ن لیگ والوں کو الیکشن سے بھاگنے نہیں دیں گے۔انہوں نے کہا کہ (ن)لیگ کی عادت بن چکی ہے اب وہ ہر الیکشن سے بھاگتے ہیں۔ آٹھ فروری کو ہر صورت الیکشن ہوں گے اور عوام ذاتی دشمنی و سیاسی انتقام کی سیاست کو 8 فروری کو دفن کر کے نئے سفر کا آغاز کریں گے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کا مقابلہ کسی سیاست دان اور سیاسی جماعت سے نہیں بلکہ غربت، مہنگائی اور بے روزگاری سے ہے، ہم دس نکاتی عوامی معاشی معاہدے سےغربت، مہنگائی اور بےروزگاری کا مقابلہ کریں گے۔
بلاول بھٹو نے پاکستان سے بھوک مٹانے کے لیے بھوک مٹاؤ پروگرام بھی شروع کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اگر وزیر اعظم بنا تو تنخواہیں دگنی، پنجاب میں مفت تعلیم اور صحت کی سہولیات فراہم کریں گے جبکہ غریب اور مستحق افرد کو 30 لاکھ گھر بنا کر دیں گے۔
پی پی چیئرمین نے کہا کہ نوجوانوں کی مالی مدد کے لیے یوتھ کارڈ لے کر آرہے ہیں، حکومت میں آ کر دن رات محنت کریں گے اور عوام کی آواز بنیں گے، ہم سب کو ساتھ لے کرچلیں گے، ہم پیچھے ہٹنے، گھبرانے اور جھکنے والے نہیں۔بلاول نے پارٹی کارکنان کو ہدایت کی کہ وہ انتخابی منشور گھر گھر پہنچانے کا کام کریں اور لاہور کو بتائیں کہ پیپلزپارٹی میدان میں اتر چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنا تھا لاہور میں ن لیگ کا راج اور پی ٹی آئی کا زور ہے مگر یہاں تو پیپلزپارٹی کے علاوہ کوئی اور جماعت میدان میں نظر نہیں آرہی۔پی پی چیئرمین نے مزید کہا کہ لاہور سے فتح حاصل کرنے کے بعد ہم اس شہر، اس صوبے کا قسمت بدلیں گے۔
https://x.com/MediaCellPPP/status/1745121041687404813?s=20

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں