ایاٹا کا حکومت سے ہوائی سفر پر ٹیکس اضافہ فوری واپس لینے کا مطالبہ

فضائی سفر کے ٹکٹ پر عجلت میں ٹیکس بڑھانے کے فیصلے کو حکومت پاکستان فوری واپس لے،ایاٹا

ٹیکس میں اضافے سے قبل تمام سٹیک ہولڈرز کو چند ماہ قبل اعتماد میں لینا لازمی ہوتا ہے، ٹیکس شرح بڑھنے سے ٹریول ایجنٹس اور ایئر لائنز کا کاروبار متاثر ہو گا
بین الاقوامی ہوائی سفر کے ٹکٹس پر حالیہ بجٹ میں اچانک ٹیکس میں 150 فیصد تک اضافہ کیا گیا، اس عمل سے پاکستان کے لیے ہوائی سفر اور سیاحت میں کمی ہو گی
اسلام آباد: ایاٹا نے حکومت سے ہوائی سفر پر ٹیکس اضافے کو فوری واپس لینے کا مطالبہ کردیا۔
بین الاقوامی ہوائی سفر کے ٹکٹس پر ٹیکس میں اضافے کے معاملے پر انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے وفاقی وزیر خزانہ کو خط لکھ کر تشویش کا اظہار کر دیا۔خط کے متن کے مطابق بین الاقوامی ہوائی سفر کے ٹکٹس پر حالیہ بجٹ میں اچانک ٹیکس میں 150 فیصد تک اضافہ کیا گیا، اس عمل سے پاکستان کے لیے ہوائی سفر اور سیاحت میں کمی ہو گی۔خط میں کہا گیا ہے کہ ٹکٹس پر ٹیکس میں اضافے سے قبل تمام سٹیک ہولڈرز کو چند ماہ قبل اعتماد میں لینا لازمی ہوتا ہے، ٹیکس شرح بڑھنے سے ٹریول ایجنٹس اور ایئر لائنز کا کاروبار متاثر ہو گا۔ایاٹا نے مطالبہ کیا ہے کہ فضائی سفر کے ٹکٹ پر عجلت میں ٹیکس بڑھانے کے فیصلے کو حکومت پاکستان فوری واپس لے۔انٹرنیشنل ایئر ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے خط میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ٹیکس میں اچانک اضافہ عالمی سول ایوی ایشن قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں